ٹیم پاکستان کی ناکامی پر مت جائیے

اوے سوری سپورٹس




کرکٹ ورلڈ کپ 2019 سے قبل پاکستان آج اپنے آخری ایک روزہ میچ میں انگلینڈ کے مدمقابل ہو گا۔ ایک طرف جہاں ورلڈ کپ میں شرکت کرنے والے ممالک اپنی ٹیموں کو حتمی شکل دے رہے ہیں وہیں سیریز میں پاکستان ٹیم کی اب تک کی کارکردگی نے بولنگ کے حوالے سے بے شمار سوالات اٹھا دیے ہیں۔

پاکستانی بولرز نے انگلینڈ کے خلاف جاری سیریز میں اب تک 81.61 کی اوسط سے صرف 13 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ اس سیریز میں 359 کا بھی ہدف باآسانی انگلینڈ نے حاصل کیا ہے اور یہ پہلا موقع ہے کہ پاکستان اپنی تاریخ میں 350 رنز سے زائد کے ہدف کو دفاع کرنے میں ناکام رہا ہو۔


اس سے قبل پاکستان نے اپنی ایک روزہ کرکٹ کی تاریخ میں نو مرتبہ 350 یا اس سے زائد رنز کا ہدف دیا ہوا ہے مگر کسی میچ میں بھی انھیں شکست کا سامنا نہیں کرنا پڑا تھا

۔

تاہم انگلینڈ کے خلاف کھیلے گئے میچوں کے نتیجے کو اگر یہ کہہ کر نظر انداز بھی کردیا دیا جائے کہ پچ بلے بازوں کے لیے مددگار تھی یا بولرز کا آج بُرا دن تھا، تب بھی گذشتہ دو برسوں کے پاکستانی بولنگ کے اعداد وشمار کو بالائے طاق نہیں رکھا جا سکتا

یاد رہے ٹیم پاکستان ہی وہ ٹیم ہے جس نے بڑے بڑوں کو
دھول چٹائی ہے

Previous
Next Post »